منطق

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ * لا الہٰ الا اللہ محمّد رسول اللہ * قُلْ هُوَ اللّـٰهُ اَحَدٌ - اَللَّـهُ الصَّمَدُ - لَمْ يَلِدْ وَلَمْ يُوْلَدْ - وَلَمْ يَكُنْ لَّـهٝ كُفُوًا اَحَدٌ

2017-06-14 02:30:59    38 Views لَقَدْ کَانَ لَکُمْ فِيْ رَسُولِ اللهِ  /  محمد اسحاق قریشی

لَقَدْ کَانَ لَکُمْ فِيْ رَسُولِ اللهِ

............. ﷽ .............
نبی مہربان #محمد_ﷺ
ایز اے
#بیسٹ_رول_ماڈل
کیا کوئی ایک بھی مثال پیش کر سکتا ہے کہ
نبی مہربان ﷺ 
سے بہتر کوئی ہستی دُنیا میں آئی ہے ؟؟؟ 
تو جواب ناں میں ہی ہو گا 
کیوں کہ آپ ﷺ جیسا نہ تو کوئی دُنیا میں 
آیا ہے اور نہ ہی قیامت تک آئے گا 
إن شاءالله العزيز و بعون اللہ تعالٰی
تاریخِ انسانی میں بہت سی نامور شخصیات گُزری ہیں 
جیسے کہ 
یونان کا أرسطو ہو یا پھر سکندرِ اعظم 
فرانس کا نپولین یا پھر چین کا ماؤزے 
جنوبی افریقہ کا نیلسن منڈیلا ہو یا پھر 
جرمنی کا ہٹلر 
پاپ اسٹار مائیکل جیکسن ہو یا پھر پکاسو ( مُصوّر )
سائنس کی دُنیا میں انقلاب برپا کرنے والا تھامس ایڈیسن ہو یا پھر ولیم شیکسپیئر( ناول نگار )
و غیر ھُم 
 ان میں سے ہر کوئی شعبہ ہائے زندگی میں سے ایک یا دو پر دسترس رکھتا تھا اور جب ہم باقی ماندہ شعبہ جات کا جائزہ لیں تو یہ سب اُن میں ناکام نظر آتے ہیں
 اور جب ہم نبی مہربان ﷺ کی مُبارك زندگی پر نظر دوڑاتے ہیں تو آپ ﷺ زندگی کے ہر شعبے
میں یکتا اور تنہا نظر آتے ہیں 
بحیثیتِ ............. باپ و شوہر 
بحیثیتِ ............. حاکم و مُنتظم 
بحیثتِ ............. داعی و مُبلغ 
بحیثتِ ............. قاضی و قانون داں 
بحیثتِ ............. فاتح و سپہ سالار 
بحیثتِ ............. عابد و زاہد 
غرضیکہ 
زندگی کے کسی بھی پہلو پر دیکھنا چاہیں تو 
آپ ﷺ ہر صفت کو بہترین طریقے سے سرانجام دیتے نظر آتے ہیں 
اسی لیے تو #الله_ﷻ نے ارشاد فرمایا کہ
" لَقَدْ کَانَ لَکُمْ فِيْ رَسُولِ اللهِ اُسْوَةٌ حَسَنَة "
" البتہ تحقیق تمہارے لیے اللہ کی رسول کی زندگی بہترین نمونہ ہے " 
اور اگر ہم آپ ﷺ کی کسی بھی صفت کو 
کماحقہ بیان کرنے کی کوشش کریں تو 
ناکامیاب ہی رہیں گے کیوں کہ
بقولِ شاعر ........
" خامہء ربّ کے سوا ، سارے قلم ہیں معذُور 
کوئی بھی مُحمّد ﷺ کا حق ادا نہیں کر سکتا " 
اور اسی طرح 
" زندگیاں بیت گئیں اور قلم ٹوٹ گئے 
آپ ﷺ کے اوصاف کا اک باب بھی پورا نہ ہوا "
اگر ہم 
بحیثتِ باپ .. آپ ﷺ کی زندگی کا جائزہ لیں تو 
آپ ﷺ نے ہمیں عمل کر کے بتلا دیا کہ 
اولاد کے حقوق کیا ہیں اور اُن کی تربیت کیسے کرنا ہے 
بحیثتِ شوہر .. آپ ﷺ کی زندگی پہ نظر ڈالیں تو 
 آپ ﷺ ہمیں گیارہ بیویوں کے درمیاں انصاف کرتے نظر آتے ہیں اُن کے ساتھ پیار و محبت اور اُن کی توقیر و تکریم کرتے نظر آتے ہیں 
بحیثتِ حاکم .. آپ ﷺ کے راج کا جائزہ لیں تو 
 آپ ﷺ عوام الناس کے قلوب و اذہان پر حکومت کرتے نظر آتے ہیں کہ آپ کے ایک اشارے پہ 
لوگ جان دینے کو سعادت سمجھتے ہیں 
بحیثتِ مُنتظم .. آپ ﷺ انتظامی اُمور کا جائزہ لیں تو 
آپ ﷺ کبھی بیت المال قائم کرتے ہیں تو کبھی زکوٰة کا نظام 
کبھی پڑوسیوں کے حقوق کے متعلق بتلاتے ہیں تو کبھی غُرباء و مساکین کی مدد کے لیے 
اہلِ ثروت و مالدار حضرات کو تلقین کرتے نظر آتے ہیں 
 بحیثتِ داعی و مُبلغ .. آپ ﷺ کی مساعی کی طرف دیکھا جائے تو آپ ﷺ کبھی اپنوں کے ہاتھوں ہی تکلیف اُٹھاتے نظر آتے ہیں تو کبھی اہلِ طائف کی جانب سے مارے گئے پتھروں سے لہولہان نظر آتے ہیں 
 تو کبھی شعبِ أبی طالب میں کسمپرسی کی زندگی گُزارنے پر مجبور اور کبھی اپنی جائے پیدائش کو چھوڑ کر ہجرت کے لیے مجبور نظر آتے ہیں 
 لیکن اللہ تعالٰی کی طرف سے مبعوث کی گئی ذمہ داری کو کماحقہ پورا کرتے ہیں اور کامیاب و کامران ٹھہرتے ہیں 
 بحیثتِ قاضی و قانون داں .. آپ ﷺ کی جانب سے بتائے گئے قوانین و ضوابط پر اک نظر ڈالیں تو آپ ﷺ فرماتے ہیں کہ قانون سب کے لیے یکساں ہے 
گورے کو کالے یا کالے کو گورے پر 
عربی کو عجمی پر اور عجمی کو عربی پر 
کوئی فوقیت حاصل نہیں إلا یہ کہ وہ کتنا مُتقی اور پرہیزگار ہے 
مُسلمان وہ ہے جس کی ہاتھ اور زبان سے دوسرے مُسلمان محفوظ رہیں 
چور کی جو سزا فاطمہ بنتِ ( ..... ) کے لیے ہے وہی سزا فاطمہ بنتِ مُحمّد ﷺ کے لیے ہے
 بحیثتِ فاتح و سپہ سالار ... آپ ﷺ کا جائزہ لیا جائے تو آپ ﷺ تقریباً ہر معرکہء حق و باطل میں إسلامی فوج کی قیادت کرتے ہوئے نظر آتے ہیں اور اپنے جاں نثاروں کو سختی سے تلقین کرتے ہیں کہ 
رستے میں یا دُشمنوں کے علاقوں میں آنے والی فصلوں ، مویشیوں کو نُقصان نہ پُہنچانا 
اور فتح کی صورت میں مفتُوحہ علاقوں میں 
 بچوں ، بُوڑھوں ، عورتوں اور ہتھیار پھینکنے والوں کو قتل نہ کرنا اور اس کی مثال اپنے بہترین عمل سے " فتح مَکّہ " کے موقع پر قائم کی جس کی نظیر پوری تاریخِ انسانی میں نہیں ملتی 
بحیثتِ عابد و زاہد .. آپ ﷺ کی حیاتِ مطہرہ کو دیکھا جائے تو 
 آپ ﷺ راتوں کو اُٹھ کر اپنے ربّ کی عبادت کرتے ہوئے نظر آتے ہیں معصوم و گناہوں سے پاک ہونے کے باوجود 
دن میں سو مرتبہ توبہ توبہ و استغفار کرتے ہوئے نظر آتے ہیں 
صدقہ و خیرات کرنے میں آپ کا کوئی ثانی نہیں 
رمضان المبارک کے علاوہ جمعہ و سوموار کے روزے کی پابندی کرتے ہوئے نظر آتے ہیں 
یہ تو تھیں چند خُصوصیات 
آپ ﷺ باقی ماندہ صفات کو بھی بخوبی سرانجام دیتے ہوئے نظر آتے ہیں 
ہم تمام اہلِ إسلام سے بالعموم اور 
کُفّار و مُلحدین کو دعوتِ توحید دیتے ہیں 
اور نبی مہربان ﷺ کی سیرتِ طیبہ کا مُطالعہ 
کرنے کی بھی دعوت دیتے ہیں کہ 
 اللہ رب العزت کی توفیق سے آپ بھی راہِ راست پر آ جائیں اسی میں دُنیا و آخرت کی کامیابی ہے 
وَ مَا عَلَیْنَا إِلَّا الْبَلَاغْ ........
اللہ سبحانه و تعالٰی !!! 
ہم سب کو ہدایت عطا فرمائے اور 
ہمارا خاتمہ بالإيمان فرمائے اور 
دُنیا و آخرت میں کامیابی عطا فرمائے 
آمِین یَا رَبَّ الْعٰلَمِیْن 
 وَ الصَّلاَةُ و َالسَّلَامُ عَلٰی رَسُولِ الله ﷺ

جگہ براۓ اشتہار

جگہ براۓ اشتہار