منطق

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ * لا الہٰ الا اللہ محمّد رسول اللہ * قُلْ هُوَ اللّـٰهُ اَحَدٌ - اَللَّـهُ الصَّمَدُ - لَمْ يَلِدْ وَلَمْ يُوْلَدْ - وَلَمْ يَكُنْ لَّـهٝ كُفُوًا اَحَدٌ

2017-06-02 01:43:47    71 Views مبلغ بنیئے فسادی نہیں  /  محمد اسحاق قریشی

مبلغ بنیئے فسادی نہیں

مبلغ بنیے فسادی نہیں 
 بنی عبد الاشہل کے سردار سعد بن معاذ بہت غصے میں تھا ۔۔۔۔بس بہت ہوگئی اب ہمارے ضعیف الاعتقاد لوگوں کو گمراہ مت کرو ان کو بے وقوف مت بناؤ اور اب آئندہ اس علاقے میں نظر مت آنا ورنہ بہت برا ہو گا اب میری آنکھوں سے جتنی جلدی ممکن ہے دور ہو جاؤ ۔
 بنی عبد الاشہل کا نوجوان سردار سعد بن معاذ ،مبلغ ِ اسلام مصعب بن عمیر کے سامنے سینہ تان کر کھڑا دھمکی دے رہا تھا ۔
سیدنا مصعب بن عمیر نے سعد بن معاذ سے کہا 
ذرا تشریف رکھیے ! ہماری بات سنیے ! اگر آپ کو ہماری بات پسند آگئی تو اسے قبول کر لیجیے گا اور اگر آپ کو ہماری بات پسند نہیں آئی تو ہم خاموش ہو جائیں گے اور آپ کو ایسی بات نہیں سُنائیں گے جو آپ کو سننا پسند نہیں ۔
 سعدبن معاذ نے کہا :تم نے انصاف کی بات کہی اور اپنا نیزہ زمین میں گاڑھ کر وہیں بیٹھ گئے سیدنا مصعب بن عمیر کی بات سننے لگے 
 سیدنا مصعب نے گفتگو شروع کی اسلام کے بنیادی عقائد بتائے قرآن کریم کی کچھ آیات تلاوت کی 
سعد بن معاذ کا چہرہ نورِ ایمان سے تمتمانے لگا اور انہوں نے اسلام قبول کر لیا ۔
قبول اسلام کے فورا بعد وہ اپنے قبلیے میں گئے اور کہا 
اے بنی عبد الاشہل ! میرے بارے میں تمہاری کیا رائے ہے ؟
قبیلے کے لوگوں نے کہا 
آپ ہمارے سردار ہیں ہم سب آپ کی رائے کا احترام کرتے ہیں 
 سعد بن معاذ نے کہا مجھ پر اس وقت تک تم سے بات کرنا حرام ہے جب تک تم اللہ و رسول ﷺ پر ایمان نہ لے آؤ
شام تک بنی عبد الشہل میں کوئی مرداور عورت ایس انہیں تھا جو ایمان نہ لے آیا ہو ۔۱
 میرے نوجوان دوستو! سوشیل میڈیا پر جب آپ اپنی بات بیان کریں تو آپ کا انداز تبلیغ کرنے کا ہو نا چاہیے اپنے اسلاف کی طرح اور آپس میں تو لازما ۔
 سیدنا مصعب بن عمیر کا انداز اس قدر خوبصور ت تا کہ وہ شخص جو انہیں نکال دینا چاہتا تھا بستی سے وہ خود ان کا گرویدہ ہو گیا یہ اس وقت تک ممکن نہیں جب تک ہم محبت پیش نہ کریں 
دلوں کومسخر کرنا مشکل نہیں بس تھوڑی سی محبت چاہیے 
۱۔ حوالے کے لیے دیکھیے ضیاء النبی جلد دوم صفحہ ۵۸۸ از پیر کرم شاہ الازہری 
تحریر :محمد اسمٰعیل بدایونی

جگہ براۓ اشتہار

جگہ براۓ اشتہار